پروین شاکر

پروین شاکر پاکستان کی بہت اچھی شاعرہ ہیں۔صنف نازک کے احساسات کو بڑی خوبی سے بیان کیا ہے

دنیا کو تو حالات سے امید بڑی تھی

اپنی رسوائی، ترے نام کا چرچا دیکھوں

بس یہ ہُوا کہ اُس نے تکلّف سے بات کی

دروازہ جو کھولا تو نظر آئے وہ کھڑے وہ

دل کو مہر و ماہ و انجم کے قریں رکھنا ہے

شہر جمال کے خس و خاشاک ہو گئے

کچھ تو ہوا بھی سرد تھی کچھ تھا ترا خیال بھی

اپنی تنہائی مرے نام پہ آباد کرے

رستہ ہی نیا ہے نہ میں انجان بہت ہوں

چارہ گر ہار گیا ہو جیسے


parveen shakir poetry
parveen shakir aik sher
parveen shakir
woh tu khushbu hai
parveen shakir
parveen | toti hai meri
parveen shakir romantic poetry
parveen | barsaat main ..
parveen shakir sher
parveen | dil ko uss
parveen shakir aks e khushbo hoon
parveen | aks e khushbo